VicksWeb upgrade Location upload ads trending
VicksWeb بھارت

کرنے پر خیرمقدم VicksWeb

Flag Counter
دنیا میں60فیصد سے زائد افراد آلودگی کے سبب موت کا شکار ہوتے ہیں :پروفیسر اشوک کمار 
Source:  Chauthi Duniya
Monday, 22 October 2018 18:04

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے ذاکر حسین کالج برائے انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے سول انجینئرنگ شعبہ کے زیرِ

The post دنیا میں60فیصد سے زائد افراد آلودگی کے سبب موت کا شکار ہوتے ہیں :پروفیسر اشوک کمار  appeared first on Chauthi Duniya.


سرکار کھلے عام رافیل معاملے پر وہائٹ پیپر لائے
Source:  Chauthi Duniya
Monday, 22 October 2018 16:06

پچھلے ہفتے کی خبروںمیںپہلی اہم خبر حکومت ہند اور فرانس سرکار کے بیچ ہوئے رافیل فائٹر جیٹ سودے سے متعلق

The post سرکار کھلے عام رافیل معاملے پر وہائٹ پیپر لائے appeared first on Chauthi Duniya.


جامعہ کا یوم تاسیس تاریخ آزادی کا اہم باب ہے
Source:  Chauthi Duniya
Monday, 22 October 2018 16:03

29 اکتوبر کو ہر سال پابندی سے تاریخی تعلیم گاہ جامعہ اسلامیہ میںمنائی جانے والی تقریب محض ایک رسمی یوم

The post جامعہ کا یوم تاسیس تاریخ آزادی کا اہم باب ہے appeared first on Chauthi Duniya.


امریکی درمیانی مدت انتخابات سے کوئی بڑا بدلائو نہیں
Source:  Chauthi Duniya
Monday, 22 October 2018 15:50

امریکی کانگریس پر چاہے کسی بھی پارٹی کا قبضہ ہو، امریکی لیجسلیٹر کی طرح اس کا بھی ہندوستان-امریکہ رشتوں پر

The post امریکی درمیانی مدت انتخابات سے کوئی بڑا بدلائو نہیں appeared first on Chauthi Duniya.


کیوں بھول گئے ہم جے پی کو؟
Source:  Chauthi Duniya
Monday, 22 October 2018 15:43

11 اکتوبر بہت کم لوگوںکو یاد ہے۔ 11اکتوبر انھیں بھی نہیںیاد ہے، جن کی پہچان ملک میں11 اکتوبر کی وجہ

The post کیوں بھول گئے ہم جے پی کو؟ appeared first on Chauthi Duniya.


آدھار کو ووٹر شناختی کارڈ سے جوڑنا خطرناک
Source:  Chauthi Duniya
Monday, 22 October 2018 15:38

مدراس ہائی کورٹ میں ایک عرضی ڈالی گئی جس میں کہا گیا کہ آدھار کو ووٹر شناختی کارڈ سے جوڑا

The post آدھار کو ووٹر شناختی کارڈ سے جوڑنا خطرناک appeared first on Chauthi Duniya.


این آئی اے کی لا پتہ دشمنوں کی فہرست میں حافظ سعید سمیت258کے نام شامل
Source:  روزنامه تاثیر
Monday, 22 October 2018 13:35

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 22-October-2018

نئی دہلی،(ہ س )۔قومی جانچ ایجنسی نے ملک کے دشمنوںکی ایک لسٹ جاری کی ہے ۔ کافی وقت سے ان کا سراغ لگانے میں مصروف این آئی اے کو اس میں کامیابی آخر کار مل ہی گئی ۔ گزشتہ روز جاری کی گئی لسٹ میں زیادہ تر دہشت گرد پڑوسی ملک پاکستان سے شامل ہیں۔ اس فہرست میں ممبئی حملے کی سازشی دہشت گرد حافظ سعید کا بھی نام ہے ۔س سلسلے میں قومی جانچ ایجنسی نے ملک کے لوگوں سے مدد مانگی ہے ۔ این آئی اے نے اسے لے کر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ این آئی اے کے مفرور مجرموں کا پتہ لگانے میں آپ کی مدد کی ضرورت ہے ۔ انہیں لے کر اگر آپ کوئی معلومات چاہتے ہیں تو برائے مہربانی011-24368800پر کال کریں۔یا ہیلپ این آئی اے ایٹ جی او طی ڈاٹ ان پر میل کریں ۔آپ کی شناخت خفیہ رکھی جائے گی ۔ بھارت کو محفوظ بنانے میں ہماری مدد کریں۔ این آئی اے نے موسٹ وانٹیڈ دہشت گردوں کی فہرست دیکھنے کے لئے این آئی اے کی ویب سائٹ کا لنک دیا ہے ۔اس فہرست کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیاہے ۔ ان میں پندرہ خواتین بھی شامل ہیں۔ پہلی فہرست میں وہ ہیں جن کے خلاف انٹر پول نے ریڈ کارنٹر نوٹس جاری کی ہوئی ہے جبکہ دوسری لسٹ میں وہ ہیں جن پر این آئی اے نے انعام کا اعلان کیاہے ۔ اس فہرست میں کشمیری دہشت گردوں کے علاوہ ناگا اور نکسل دہشت گردوں کو بھی شامل کیا گیا ہے ۔ فہرست میں حافظ سعید کے علاوہ جو نام اہم ہیں انمیں دہشت گرد الیاس کشمیری،سید صلاح الدین ،ذکی الرحمان لکھنوی سمیت کئی خواتین دہشت گرد اور ناگا دہشت گردن اور نکسلی بھی شامل ہیں۔ اس لسٹ کو سینٹرول بیورو آف انوسیٹی گیشن ،قومی جانچ ایجنسی اور انٹلی جینس بیورو نے مل کر تیار کیا ہے ۔ خفیہ رپورٹوں کے مطابق ممنوعہ ماؤ نواز تنظیم کے سر فہرست لیڈر وںمیں گنپتی اور 2017میںبہار میں شک ظاہر کیا گیا تھا لیکن ان کی جگہ پرپتہ لگایا نہیں جا سکا ۔ ان کا ممکنہوارث نمبلا کیشو راؤ عرف بسوراج بھی فہرست میں شامل ہیں اور ان پر دس لاکھ روپے کا انعام ہے ۔ افسروں کے مطابق بسو راج کو آئی ای ڈی میں ایک ماہر مانا جاتا ہے اور نہیں فوجی پالیسی کا اچھا علم ہے ۔


راہل کا چھتیس گڑھ میں کسان کانفرنس کے ذریعہ انتخابی مہم کا آغاز
Source:  روزنامه تاثیر
Monday, 22 October 2018 13:32

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 22-October-2018

رائے پور (یواین آئی) کانگریس کے صدر راہل گاندھی کل یہاں کسان کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے چھتیس گڑھ میں اسمبلی انتخابات میں الیکشن کی مہم کا آغاز کریں گے۔ پارٹی ذرائع کے مطابق مسٹر گاندھی ومانتل سے وی آئی پی روڑ پر واقع ایک ہوٹل میں پارٹی کارکنوں کے ساتھ ظہرانے کے بعدسائنس کالج میدان میں منعقدہ کسان کانفرنس سے خطاب كریں گے۔ مسٹر گاندھی اس کانفرنس کے ذریعہ مودی اور رمن حکومت کو گھیرنے کی کوشش کریں گے اور کانگریس کی حکومت بننے پر کسانوں کے لئے کچھ اہم اعلانات بھی کر سکتے ہیں۔ذرائع کے مطابق اس کانفرنس کے ذریعے ان کی طرف سے ریاست کے کسانوں کو کانگریس کی طرف سے ایک پیغام دینے کی کوشش ہو گی۔ کانفرنس کے بعد مسٹر گاندھی کا تاریخی مہامایا دیوی مندر کا درشن کرنے کا بھی پروگرام ہے تاہم سیکورٹی ایجنسیوں نے وہاں ان کے جانے کے سلسلے میں اجازت نہیں دی ہے۔مسٹر گاندھی ومانتل کے لئے واپسی میں وی آئی پی روڑ پر واقع ایک ہوٹل میں کچھ سماجی اور رضاکار تنظیموں کے نمائندوں سے بھی ملاقات کریں گے۔ اس کے ساتھ ہی وہ پارٹی کے ریاستی انچارج اور پارٹی کے الیکشن کی کور کمیٹی کے ممبروں سے بات چیت بھی کریں گےجس میں پارٹی امیدواروں کی فہرست پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔


ڈیزل اور پٹرول کی قیمتوں میں کمی
Source:  روزنامه تاثیر
Monday, 22 October 2018 13:30

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 22-October-2018

نئی دہلی،(یواین آئی) بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کےسبب مقامی مارکیٹ میں پٹرول اور ڈیزل کے دام گزشتہ چار دنوں سے مسلسل گھٹ رہے ہیں۔ اس دوران پٹرول 1.09 روپے اور ڈیزل 50 پیسے فی لیٹر سستا ہوا ہے۔ انڈین آئل کارپوریشن کے مطابق اتوار کو پٹرول اور ڈیزل کے دام دہلی میں بالترتیب 25 اور 17 پیسے فی لیٹر کم ہوئے۔ دارالحکومت میں اتوار کو ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 81.74 روپے اور ڈیزل کی قیمت 75.19 روپے ر ہے۔ عروس البلاد ممبئی میں دام بالترتیب 87.21 روپے اور 78.82 روپے فی لیٹر ہے۔کولکاتہ میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں بالترتیب 83.58 روپے اور 77.04 روپے فی لیٹر تو چنئی میں بالترتیب 84.96 روپے اور 79.51 روپے فی لیٹر فروخت ہورہے ہیں۔


چیف جسٹس نے پریزائیڈنگ افسروں اور ڈاکٹروں کیلئے تربیتی پروگرام کا افتتاح کیا
Source:  روزنامه تاثیر
Monday, 22 October 2018 13:28

Taasir Urdu News Network | Uploaded on 22-October-2018

جموں،( ایجنسی)۔جموں کشمیر ہائی کورٹ کی چیف جسٹس گیتا متل نے گھریلو اور جنسی تشدد کے متاثرین کو انصاف دلانے میں ڈاکٹروں کے رول کو اجاگر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک متاثرہ کے مرتے ہوئے بیان اور ڈاکٹروں کی سند سے اس طرح کے جرائم میں ملوث مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچانے میں مدد مل سکتی ہے۔ چیف جسٹس پریذائیڈنگ افسروں اور ڈاکٹروں کیلئے منعقدہ ایک روزہ تربیتی پروگرام کے دوران خطاب کر رہی تھیں۔ اس تربیتی پروگرام میں شرکاء کو اس بات کی تربیت دی گئی کہ وہ کس طرح سے جنسی تشدد کے معاملات کو اپنے اسپتالوں میں ہینڈل کر سکتے ہیں۔ اس تربیتی پروگرام کا انعقاد جموں کشمیر ہائی کورٹ کے بینر تلے جموں کشمیر سٹیٹ جوڈیشل اکیڈمی نے محکمہ صحت کے اشتراک سے کیا گیا تھا۔ چیف جسٹس نے ڈاکٹروں اور قانونی ماہرین کے ایک مجمع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے تربیتی پروگرام کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ ڈاکٹروں کو اس بات سے روشناس کرایا جائے کہ وہ کس طرح ایک متاثرہ کو انصاف دلانے میں اپنا رول ادا کر سکتے ہیں۔جسٹس گیتا متل نے کہا کہ گھریلو تشدد کے سلسلے میں ایک ڈاکٹر مریض کی حالت کے پیچھے وجوہات جاننے کی کوشش کرتا ہے اور وہ مریض کی تاریخ بھی درج کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ایک متاثر فوت ہو جاتا ہے تو ڈاکٹر کی طرف سے ریکارڈ کئے گئے مریض کے بیان کو جج صاحبان متاثرہ کی مرتے وقت ڈیکلریشن تصور کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس ڈیکلریشن اور ڈاکٹر کی طرف سے متاثرہ کے بیان کی تصدیق سے مجرموں کو سزا دلائی جا سکتی ہے۔ چیف جسٹس نے ڈاکٹر اور وکلاء کے درمیان متواتر طورپر استفسار کے پروگرام منعقد کرانے کی ضرورت پر زور دیا تا کہ پیشہ وارانہ فرائض کی انجام دہی کے دوران ابھرنے والے شکوک و شبہات کو دور کیا جا سکے۔ انہوں نے جنسی تشدد سے متاثرہ کی میڈیکل جانچ سے جْڑے مختلف امور پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ ریپ ایک میڈیکل ٹرم نہیں ہے اور یہ طبی کتابوں میں نہیں پڑھائی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کی وضاحت 2013 میں قانون میں ترمیم کے بعد سامنے ا?ئی اور اس کے کئی معنی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ تمام قانونی تصورات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مریض کی طبی جانچ کے دوران ڈاکٹروں کو کیا ریکارڈ کرنا ہے یہ ایک بحث طلب بات ہے۔چیف جسٹس نے کہا کہ ذاتی مفادات سے بالا تر ہونے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے اس تعلق سے ایک جنسی ورکر کی مثال دی جو جنسی زیادتی کی شکایت لے کر ا?تی ہے اور لوگوں کے سامنے پہلے یہ تصور آجاتا ہے کہ جنسی ورکر کے ساتھ زیادتی کیسے ہو سکتی ہے۔انہوں نے امریکہ کے سپریم کورٹ کے ایک جج کے الفاظ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس جج نے کہا ہے کہ ’’ ہم میں سے ہر ایک اپنی زندگی کے تجربات اپنے ساتھ لے آتے ہیں چاہے وہ جس طرح کے بھی ہوں چاہے وہ ایک کھلاڑی ہو یا ایک ڈاکٹر ہمیں یہ سوچنا ہے کہ ہمیں ذاتی سوچ سے بالا تر ہو کر کام کرنا چاہئیے ‘‘۔ جسٹس گیتا متل نے اس بات کی وضاحت کی کہ ڈاکٹروں کو کچھ قانونی جانکاری کے بارے میں روشناس کرانے کی کیا اہمیت ہے اور انہیں عدالت کا ایک سمن ملنے کے بعد کس طرح کا ردِ عمل ظاہر کرنا چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ایک ڈاکٹر کو عدالت میں بحثیت شاہد سامنے ا?نا ہو گا اور اسی وقت اْسے ایمر جنسی کے طور پر ہسپتال بھی جانا ہو گا تو اس صورت میں ڈاکٹر کو کیا کرنا چاہئیے۔ کیا اْن کو عدالت جانا چاہئیے یا انہیں مریض کو دیکھنا چاہئیے لہذا انہیں قانون کی جانکاری دی جانی چاہئیے تا کہ وہ اس طرح کے صورتحال سے بخوبی نمٹ سکے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ تربیتی پروگرام کے دوران شرکاء جنسی تشدد کے معاملات کے ارد گرد تمام پہلوو?ں کو سمجھ سکیں گے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ اس طرح کے پروگرام ریاست کے تمام خطوں میں بشمول لداخ میں بھی منعقد کئے جانے چاہئیں تا کہ پیشہ ور لوگوں میں بیداری پیدا کی جا سکے۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کے پروگراموں سے ہمیں شک و شبہات کو دور کرنے میں مدد ملتی ہے خاص طور سے جنسی تشدد سے متاثرین کی طبی جانچ کے دوران ڈاکٹروں کی طرف سے اختیار کئے جانے والے قانونی لایحہ عمل کے بارے میں انہیں جانکاری دی جا سکتی ہے۔تربیتی پروگرام کے دوران ریسورس افراد ڈاکٹر جگا دیش نارائین ریڈی اور ودھیا ریڈی نے شرکاء کے ساتھ مختلف معاملات پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ اس تبادلہ خیال کے دوران جنسی تشدد سے جْڑے مختلف معاملات اور فارنسک معاملات کے تعلق سے قوانین پر سیر حاصل بحث ہوئی۔ ودھیا ریڈی نے شرکاء کو بچوں کے جنسی تشدد کے مختلف پہلوو?ں کو سمجھنے کی افادیت سے شرکاء کو روشناس کرایا۔ پروگرام میں شرکت کرنے والے ڈاکٹروں کو اس بات کی کونسلگ دی گئی کہ وہ عدالت میں اپنی شہادت کس طرح سے دے سکتے ہیں۔ ورکشاپ میں شرکاء نے اپنے اپنے تجربات پیش کئے۔ اس سے پہلے ڈائریکٹر اسٹیٹ جوڈیشل اکیڈمی عبدالرشید ملک نے معزز شخصیات اور دیگر شرکاء کا خیر مقدم کرتے ہوئے موضوعات کو متعارف کیا۔


<< < Prev 1 2 3 Next > >>